کیا فیفا پر بکائیو ساکا کی تازہ ترین پوسٹ میں بابر اعظم کا ذکر تھا؟

Written by
Did Most Recent Bukayo Saka Post on FIFA Mention Babar Azam

ملک میں سوشل میڈیا صارفین نے حال ہی میں قومی فخر کا ایک مبالغہ آمیز احساس پیدا کیا ہے، یہ مانتے ہوئے کہ فیفا اپنے سوشل میڈیا کیپشن کو خاص طور پر پاکستانی سامعین کے لیے اپنی مرضی کے مطابق بناتا ہے۔


یہ جذبات اس وقت بھڑک اٹھے جب عید کے موقع پر اوٹس خان کی تصویر فیفا کے پیج پر شائع ہوئی۔


تاہم، بہت سے پاکستانی شائقین اس بات سے لاعلم ہیں کہ یہ صرف پاکستان کے لیے تیار کردہ پوسٹ تھی اور عالمی سطح پر شیئر نہیں کی گئی۔


حال ہی میں دعوے سامنے آئے ہیں کہ فیفا کا انسٹاگرام صفحہ صارفین کے جغرافیائی مقامات کی بنیاد پر اپنے مواد کو ایڈجسٹ کرتا ہے۔


خاص طور پر، یہ الزام لگایا گیا ہے کہ اوٹس خان کی عید کی تصویر، عارف لوہار کی موسیقی پر مشتمل ایک لیونل میسی کی تالیف، اور اردو کیپشن کے ساتھ بکائیو ساکا کی ایک حالیہ پوسٹ کو خاص طور پر پاکستانی سامعین کے لیے ڈیزائن کیا گیا تھا اور یہ عالمی مواد کا حصہ نہیں تھے۔


پاکستانی نژاد فٹبالر اوٹس خان کو عید کی خوشی میں فیفا کے ایک انسٹاگرام پوسٹ میں دکھایا گیا۔ یہ دعویٰ کیا جاتا ہے کہ یہ پوسٹ بنیادی طور پر پاکستان کے صارفین کو جیو کسٹمائزیشن کی وجہ سے دکھائی گئی تھی۔


اسی طرح، بکائیو ساکا کی پوسٹ، جس میں ایک اردو کیپشن شامل تھا، کو صرف اور صرف پاکستانی سامعین کو نشانہ بنایا گیا تھا اور یہ عالمی یوزر بیس کے لیے نظر نہیں آتی تھی۔


وی پی این کا استعمال اس بات کی تصدیق کرسکتا ہے کہ یہ پاکستان میں مخصوص سامعین کے لیے ایک حسب ضرورت پوسٹ ہے۔

یہ خیال کہ FIFA نے ساکا کے گول کو حسن علی سے متاثر انسٹاگرام پوسٹ کے ساتھ منایا غلط ہے۔ یہ صرف پاکستانی ناظرین کے لیے اپنی مرضی کے مطابق بنایا گیا تھا۔


سوشل میڈیا کے بڑے پلیٹ فارمز، بشمول Instagram، ایسے مواد کو ظاہر کرنے کے لیے نفیس الگورتھم استعمال کرتے ہیں جو صارفین کی دلچسپیوں اور مقامات کے مطابق ہو۔
تاہم، براہ راست جیو ٹارگٹنگ، جہاں کوئی پوسٹ مکمل طور پر ایک مخصوص مقام تک محدود ہے، کم عام ہے۔


ایک عالمی تنظیم کے طور پر، فیفا کا مقصد متنوع سامعین کو شامل کرنا ہے۔ اگرچہ یہ ثقافتی طور پر متعلقہ مواد تخلیق کرتا ہے، لیکن اس بات کا کوئی ٹھوس ثبوت نہیں ہے کہ اوٹس خان کی عید کی تصویر یا بکائیو ساکا کے اردو کیپشن والے پیغام جیسی پوسٹس کو صرف پاکستان کے لیے جغرافیائی ہدف بنایا گیا ہے۔


نہ صرف پاکستان کے مختلف علاقوں کے صارفین نے ان پوسٹس کو دیکھنے کی اطلاع دی ہے۔

یہ ایک محدود، مقام کے لحاظ سے مخصوص نقطہ نظر کی بجائے وسیع تر مرئیت کی نشاندہی کرتا ہے۔

Article Tags:
·
Article Categories:
کھیل

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Shares